مریم اورنگزیب نے پاکستان ریونیواتھارٹی کے قیام کے حکومتی اقدام کو مسترد کردیا

اسلام آباد: پاکستان مسلم لیگ (ن) کی ترجمان مریم اورنگزیب نے پاکستان ریونیواتھارٹی کے قیام کے حکومتی اقدام کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ ٹیکس نظام میں تبدیلی پر پارلیمان میں بحث کرائی جائے،عمران صاحب ٹیکس وصولیوں میں اضافے کے راستے میں آپ کی نااہلی، ضد اور تکبر رکاوٹ ہے،ٹیکس مشینری کا وزیراعظم پر عدم اعتمادانتظامی و معاشی بحران کا ثبوت ہے ،ایف بی آر افسران کا وزیراعطم پر نیا نظام مفاد پرستوں کے ذریعے بنانے کا الزام سنگین ہے، آزادانہ تحقیقات کرائی جائے۔جمعرات کو اپنے بیان میں انھوں نے کہاکہ عمران صاحب ٹیکس وصولیوں میں کمی کی وجہ چور، جھوٹا ، نااہل اور نالائق وزیراعظم ہے،عمران صاحب ٹیکس ریوینیو میں تاریخی خسارہ عوام کا آپ پہ عدم اعتماد ہے ،نوازشریف کی قیادت میں مسلم لیگ (ن) نے پانچ سال میں 97 فیصد ٹیکس وصولی میں اضافہ کیا،مسلم لیگ (ن) 2003ء￿ میں 1950 ارب ٹیکس وصولی کو 2018ء￿ 3842 ارب کی ریکارڈ سطح تک لائی عمران صاحب آپ کے پہلے ہی سال میں ایف بی آر ٹیکس وصولی کا ہدف حاصل کرنے میں ناکام رہا۔انھوں نے کہاکہ پاکستان ریونیواتھارٹی کے قیام کا فیصلہ آمرانہ، عاجلانہ، جاہلانہ اور تباہ کن ہے ۔جب صنعت، زراعت، روزگار، دکان، مزدوری بند ہو تو ٹیکس کہاں سے آئے گا؟عمران صاحب پالیسی ریٹ 13.25 فیصد ہوگا تو ٹیکس ریونیو کہاں سے آئے گا؟،مسلم لیگ (ن) کے آخری سال کے مقابلے میں پی ٹی آئی ٹیکس وصولیوں کا ہدف پورا نہ کرپائی۔انھوں نے کہاکہ 735 ارب کے ریکارڈ ٹیکس عائد کرنے کے باوجودپی ٹی آئی جولائی تا اکتوبرکا167 ارب کا ہدف پورا نہ کرسکی۔پاکستان ریونیواتھارٹی کے قیام سے پہلے حکومت تمام متعلقہ فریقین سے مشاورت کرے ۔عمران صاحب کی تبدیلی دراصل قومی اداروں کو تباہ کرنے کی منظم حکمت عملی ہے ۔انھوں نے کہاکہ پہلے ہی ریونیو وصولیوں کا تاریخی خسارہ ہے، نئے بحران سے معاشی اہداف پورے نہیں ہوں گے۔نالائق اور نااہل حکومت پاکستان کا معاشی دیوالیہ کرنے پر تلی ہوئی ہے ۔اوپر نالائق بیٹھا ہوتو عوام کو روٹی، روزگار ملتا ہے نہ ہی معیشت اور ادارے چلتے ہیں۔انھوں نے کہاکہ تکبر، ضد، دھونس اور دھمکی سے ادارے نہیں چل سکتے ۔پی ایم ڈی سی، جی آئی ڈی سی، ایتھینول، ہسپتالوں کی نجکاری، بجٹ سازی ہر جگہ حماقتوں کا مینا بازار لگا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں