امریکہ افغانستان میںباعزت پسپائی کے بجائے اب شرمناک اورعبرتناک شکست سے دوچار ہوگا:حافظ حسین احمد

کوئٹہ جمعیت علمائے اسلام کے مرکزی ترجمان اورممتاز پارلیمنٹرین حافظ حسین احمدنے کہاہے کہ امریکہ افغانستان میںباعزت پسپائی کے بجائے اب شرمناک اورعبرتناک شکست سے دوچار ہوگا، ٹرمپ نے بھارت کوخوش کرنے کے لیے طالبان سے طے شدہ معاہدے کو ختم کرنے کا اعلان کرکے ثابت کیا وہ اب بھی خطے میں بھارت کو چودھراہٹ دینا چاہتاہے۔ وہ پیر کے روز اپنی رہائشگاہ جامعہ مطلع العلوم میں مختلف وفود اور صحافیوں سے گفتگوکررہے تھے۔ اس موقع پر حافظ زبیر احمد،مولوی محمد طاہر توحیدی،سعید احمد، ولی اللہ مغیری، اقبال بادینی، ظفر حسین بلوچ، حافظ عبدالظاہر، حاجی محمدرفیق لہڑی اوردیگر بھی موجود تھے۔ حافظ حسین احمد نے کہا کہ ہمارے حکمرانوںنے ہر دور میں امریکہ کی دوستی کے سوراخ سے اپنے آپ کو ڈسوانے کے باوجود امریکی غلامی کا طوق اپنے گلے میںڈالے رکھاہے جبکہ امریکہ ، بھارت اور اسرائیل کا تکون سقوط ڈھاکہ سمیت ہرسانحہ میںپاکستان اوراسلام دشمنی میں مصروف رہاہے ، حافظ حسین احمدنے کہاکہ افغانستان کے میدان جنگ کی طرح مذاکراتی میز پر بھی طالبان نے امریکہ اور اس کے حواریوں کو شکست دیدی ہے ، انہوںنے کہاکہ امریکہ نے اپنی باعزت پسپائی اور واپسی کاسنہرا موقع گنوادیاہے، اب انشاء اللہ وہ مزید عبرت اور رسوائی کانشان بنے گا ، انہوںنے کہاکہ ماضی کی طرح ستمبر میں ستمگر اپنے انجام کو پہنچیں گے اور دسمبر میں نیازی ہتھیار ڈال سکتا ہے، ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ’’نکے‘‘ سے قومی سطح پر جو کام لینا تھا لیا جاچکا ہے اگر اس کو مزید رکھا گیا تو بین الاقوامی کھلاڑی اس کے ذریعے ملک کو خدانخواستہ ناقابل تلافی نقصان پہنچاسکتے ہیں اس لیے توقع ہے کہ ’’درد‘‘ دینے والے اب دوا دیں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں