آر ایس ایس ذہنیت کا فروغ ملکی تقسیم کا باعث بن سکتا ہے، سربراہ سکھ تنظیم اکال تخت

لدھیانہ:  سکھوں کی تنظیم اکال تخت کے سربراہ ہرپریت سنگھ نے بھی آر ایس ایس پر پابندی عائد کرنے کا مطالبہ کردیا، ہندو انتہا پسند تنظیم راشٹریہ سیوک سنگھ کی ذہنیت ملکی تباہی کا باعث بن سکتی ہے،یہ تنظیم ملک کے مفاد میں نہیں،اس سے ملک تباہ و برباد ہو کر رہ جائیگا۔ بھارتی میڈیا کے مطابق سکھوں کی تنظیم اکال تخت کے سربراہ ہرپریت سنگھ نے بھی آر ایس ایس پر پابندی عائد کرنے کا مطالبہ کردیا۔ہندوانتہا پسند تنظیم راشٹریہ سوائم سیوک سنگھ کے خلاف بھارت کے اندر سے ہی آوازیں اٹھنے لگیں۔ سکھوں کی تنظیم اکال تخت کے سربراہ ہرپریت سنگھ نے بھی آر ایس ایس پر پابندی عائد کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے تنظیم کے رہنمائوں کے بیانات کو بھی مسترد کردیا۔ہرپریت سنگھ نے کہا کہ آرایس ایس کے فروغ سے قوم اورملک میں تقسیم پیدا ہوجائے گی، لہذا اس کو روکنا چاہیے، اس کی سرگرمیوں سے ملک میں تفریق جنم لے گی، یہ تنظیم ملک کے مفاد میں نہیں اور اس سے ملک تباہ و برباد ہوجائے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں