چین اور پاکستان کے مابین سزا یافتہ افراد کی منتقلی کے معاہد ے کا تبادلہ

بیجنگ( ویب ڈیسک) چین کے نائب وزیر خارجہ لو زوہوئی نے کہا ہے کہ پاکستان اور چین دوطرفہ تعاون کی اعلی سطح کو برقرار رکھیں گے ، فریقین کو ہر سطح پر تبادلے کو مضبوط بنانا چاہئے ، وبائی مرض سے متعلق تعاون کو گہرا ، سی پیک اور بیلٹ اینڈ روڈ انیشی ایٹو کی اعلی معیار کی تعمیر کو فروغ دینا چاہئے۔بدھ کو گوادر پرو کے مطابق چین کے نائب وزیر خارجہ لو زوہوئی نے پاکستانی سفیر معین الحق سے ملاقات کی اور چین پاکستان تعلقات اور اعلی سطح پر مشترکہ طور پر چین پاکستان اقتصادی راہداری (سی پیک )کی تعمیر پر تبادلہ خیال کیا۔

ملاقات میں لو نے کہا کہ چین اور پاکستان کے مابین سدا بہار تعاون میں کوویڈ 19 اور دیگر پریشانیوں کے باوجود اعلی سطح پر فروغ جاری ر ہا ،چین اور پاکستان دونوں ممالک کے رہنماﺅں کے اتفاق رائے اور چین پا ک وزرائے خارجہ کے اسٹریٹجک مذاکرات کے نتائج پر عمل درآمد کریں۔ فریقین کو ہر سطح پر تبادلے کو مضبوط بنانا چاہئے ، وبائی مرض سے متعلق تعاون کو گہرا ، سی پیک اور بیلٹ اینڈ روڈ انیشی ایٹو کی اعلی معیار کی تعمیر کو فروغ دینا چاہئے۔ دونوں ممالک کو بین الاقوامی اور علاقائی امور پر ہم آہنگی اور تعاون کو مضبوط بنانا چاہئے اور آئندہ سال سفارتی تعلقات کے قیام کی 70 ویں سالگرہ منانے کے لئے اچھے منصوبے بنا نے چاہے تاکہ باہمی رشتوں کو زیادہ سے زیادہ ترقی کے لئے آگے بڑھایا جاسکے۔ سفیر معین الحق نے کہا کہ چین میں سفیر ہونا اعزاز کی بات ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان اور چین بے مثال ” آہنی دوست” ہیں۔ پاکستان اپنے بنیادی مفادات سے متعلق تمام امور پر چین کی بھر پور حمایت کرنے کے لئے تیار ہے۔ پاکستان نے چین کو خلوص دل سے مبارکباد پیش کی ہے کہ وہ اس وبا سے لڑنے اور ترقی کو دوبارہ شروع کرنے میں پیش پیش رہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں