بلوچستان اسمبلی میں وزراء کی عدم موجودگی کی بناء اسپیکرنےاجلاس ملتوی کردیا۔

(ویب ڈیسک )
بلوچستان اسمبلی کا اجلاس بلوچستان اسمبلی کا اجلاس اسپیکرعبدالقدوس بزنجو کی صدارت میں ایک گھنٹہ 30 منٹ کی تاخیر شروع ہوا، توایوان میں ملک میں حالیہ دہشت گردی میں شہید ہونےوالےشہدا کے روح اٰیصال ثواب کے لئے فاتحہ خوانی کی گئی اوروزیراعلی جام کمال جو کروناوائرس کا شکار ہوئے ہیں انکی صحت یابی کےلئے خصوصی دعا کی گئی ،

پوائنٹ آف آرڈر پر بولتے ہوئے اپوزیشن رکن اسمبلی نصیراحمد شاہوانی نے کہاکہ سردیاں شروع ہونےسے قبل ہی گیس پریشر میں کمی اورگیس کی لوڈشیڈنگ شروع ہوگئی ہے جس پر اسپیکر نے جی ایم ایس ایس جی سی کو وضاحت کےلئے کل تین بجے طلب کرنے کی ہدایت کی ، ایوان میں وفقہ سوالات شروع ہوا تو وزیر داخلہ کی عدم موجودگی پر رکن اسمبلی جان جمالی نے کہاکہ اگر وزراء اجلاس میں جوابات دینے نہیں آسکتے تو اسپیکر بھی اٹھ کر چلے جائیں۔

جس پر اسپیکر نے رولنگ دیتے ہوئے کہاکہ وزراء اکثروبیشتر جوابات دینے کےلئے ایوان میں نہیں آتے جس سے ایوان کا استحقاق مجروع ہوتاہے بعدازاں اسپیکر نے احتجاجا اسمبلی کااجلاس جمعہ دن 3 بجے تک متوی کردیا

اپنا تبصرہ بھیجیں