خبریں پڑھنے کے لیے انسان کا متبادل تھری ڈی نیوز اینکر

بیجنگ: ٹیکنالوجی کے اس دور میں سائنس آئے روز نت نئی ایجادات کر رہی ہے اور سائنسدان لوگوں کی زندگیوں کو آسان بنانے کے لیے دن رات کوششوں میں مصروف ہیں۔حال ہی میں سائنس کی دنیا میں ایک بڑی اور اہم پیش رفت سامنے آئی ہے جہاں ٹیکنالوجی نے انسانوں کا متبادل بھی تلاش کرلیا ہے۔چین کی سرکاری نیوز ایجنسی نے جدید ٹیکنالوجی کا استعمال کرتے ہوئے دنیا کی پہلی تھری ڈی نیوز اینکر متعارف کرادی ہے۔غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق چین کی جانب سے پیش کی جانے والی اس تھری ڈی نیوز اینکر کی یہ خاصیت ہے کہ یہ با آسانی گھوم سکتی ہے جب کہ یہ چہرے پر پیچیدہ تاثرات بھی ظاہر کرنے کی صلاحیت رکھتی ہے۔دوسری جانب یہ تھری ڈی نیوز اینکر اپنے بال اور لباس میں بھی تبدیلی لاسکتی ہے جب کہ یہ انسانوں کی طرح پلکیں بھی جھپکاتی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں