پیشکش کے باوجود مجھے پاکستان ٹیم کیلئے کھیلنا ہے انگلینڈ کیلئے نہیں، جنید خان

کراچی قومی کرکٹ ٹیم کے فاسٹ بولر جنید خان نے کہا ہے کہ برطانوی شہریت رکھنے کے باوجود میرے لیے پاکستان سب سے پہلے ہے، برطانوی پیشکش کے باوجود مجھے پاکستان ٹیم کیلئے کھیلنا ہے انگلینڈ کیلئے نہیں۔اپنے ایک انٹرویو میں ٹیسٹ کرکٹر جنید خان کا کہنا تھا کہ مجھے کاونٹی سے چار سال کے معاہدے کی پیشکش ہوئی تھی اگر معاہدہ کرلیتا تو پاکستان کا سیزن اوورسیز کھلاڑی بن کر کھیلنا پڑتا۔انہوں نے کہا کہ کاقنٹی کھیلنے کا مطلب انگلینڈ ٹیم میں شمولیت کا راستہ بننا ہے، ابھی میرا مقصد ڈومیسٹک کرکٹ کھیل کر پاکستانی ٹیم میں کم بیک کرنا ہے کیونکہ مجھے صرف پاکستان ٹیم کیلئے کھیلنا ہے انگلینڈ کیلئے نہیں۔برطانوی شہریت رکھنے کے باوجود میرے لیے پاکستان پہلے ہے، پاکستان میں جو عزت ملتی ہے وہ انگلش کرکٹر بن کر بھی نہیں مل سکتی۔جنید خان کا مزید کہنا تھا کہ صوابی کے چھوٹے سے گاں سے آیا ہوں، میری پرفارمنس کیا رہی سب لوگ جانتے ہیں، امید یہی ہے کہ میرا ڈومیسٹک سیزن اچھا گزرے گا۔ایک سوال کے جواب میں جنید خان کا کہنا تھا کہ ورلڈ کپ2019سے باہر ہونے پر مجھے کافی مایوسی ہوئی تھی، منہ پر ٹیپ لگا کر تصویر پوسٹ کرنا میرا کچھ زیادہ ہی ردعمل تھا تاہم ان دنوں میں بہت اپ سیٹ بھی تھا۔جب شائقین نیمجھ سیکہا کہ میری اس پوسٹ سے پاکستان کرکٹ کا نام خراب ہورہا ہے تومیں نے پوسٹ ڈیلیٹ کردی۔میں ایسا کام کبھی نہیں کروں گا جس سے ملک کا نام خراب ہو، میں نے ہمیشہ اپنے ذاتی مفاد سے پہلے ملک کو مقدم رکھا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں