اسپیکر قومی اسمبلی سے افغان ہم منصب کی ملاقات ، دو طرفہ تعلقات مضبوط بنانے پر تبادلہ خیال کیا گیا

اسلام آباد(ویب ڈیسک) اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے کہا ہے کہ پرامن اور خوشحال افغانستان کا خواب جلد پورا ہونے جا رہا ہے، پرامن اور خوشحال افغانستان نہ صرف علاقائی امن و سلامتی بلکہ دونوں ممالک کے عوام کی سماجی و معاشی ترقی کے لئے بھی ضروری ہے۔

انہوں نے ان خیالات کا اظہار پارلیمنٹ ہاﺅس میں ولسی جرگہ (افغان پارلیمنٹ)کے اسپیکر میر رحمن رحمانی سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ افغان اسپیکر 17رکنی وفد کے ہمراہ جمعہ کی صبح پاکستان کے چھ روزہ پر اسلام آباد پہنچے ہیں۔

اسپیکر اسد قیصر نے افغان اسپیکر سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان نے ہمیشہ ایک پرامن اور خوشحال افغانستان کی خواہش کی ہے جو نہ صرف پاکستان بلکہ پورے خطے کے مفاد میں ہے۔ انہوں نے کہا کہ افغان امن عمل میں شامل فریقین کو ملک میں پائیدار امن کے قیام سے فائدہ اٹھانا چاہئے۔

اسپیکر اسد قیصر نے کہا کہ دوطرفہ تجارت اور افغان ٹرانزٹ ٹریڈ میں ٹیرف اورطریقہ کار میں حائل رکاوٹیں دور کردی گئیں ہیں ۔ پاکستان آنے کے خواہشمند افغان شہریوں اور تجارتی برادری کے لئے سرحدوں پر سہولیات مہیا کرنے کے علاوہ طلبا مریضوں اور دیگر افغان باشندوں کے لیے آزدانہ ویزہ پالیسی کا اجرا کیا گیا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک اپنی جغرافیائی اہمیت کو بروئے کار لا کر معاشی خودمختاری حاصل کرسکتے ہیںاسد قیصر نے کہا کہ دونوں ممالک کے مابین پارلیمانی سطح پر رابطوں میں اضافے سے دوطرفہ تجارت اور باہمتی تعاون میں فروغ حاصل ہو گا، دونوں ممالک کے مابین تجارتی اور معاشی روابط کو ترجیح دینے کی ضرورت ہے کیونکہ دونوں برادر ممالک میں باہمی تجارت اور سرمایہ کاری کے وسیع مواقع موجود ہیں ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں