سینیٹ میں اپوزیشن کا مہنگائی اور کراچی واقعہ پر شدید احتجاج

اسلام آباد(ویب ڈیسک) سینیٹ میں اپوزیشن جماعتوں نے ملک میں بڑھتی مہنگائی اور کراچی واقعہ پر شدید احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کے مٹنے کے دن آچ کے ہیں ،حکومت کے خاتمہ کا کاﺅنٹ ڈاﺅن شروع ہے ، اللہ تعالی موجودہ حکومت سے عوام کو نجات دلائے گا ، حکومت نے لوگوں سے ایک کروڑ ملازمتوں اور پچاس لاکھ گھروں کا وعدہ کیا تھا لیکن آج لوگوں سے ملازمتیں چھینی جا رہی ہیں اور مہنگائی کے طوفان کے باعث غریب آدمی کے گھر کا چولہا بجھ گیا ہے،ریاست کے اندر ریاست نہیں چلنے دینگے، کراچی واقعہ پر سندھ پولیس کے ساتھ کھڑے ہیں ،

دوسری جانب سینیٹ میں قائدایوان ڈاکٹر شہزاد وسیم نے کہا ہے کہ معاشی بدحالی سے ہم معاشی استحکام کی طرف جا رہے ہیں،برآمدات بڑھ رہی ہیں، تجارتی خسارہ منفی سے مثبت ہو چکا ہے، گیارہ جماعتوں نے سرکس لگا رکھی ہے ، زبان کسی کی اور بیان کسی اور کا ہے ،سب ایک شاخ پہ بیٹھے ہیں ، وزیراعظم عمران خان جانتا ہے کہ گیارہ کو۔نو دو گیارہ کیسے کرنا ہے۔

ایوان بالا میں اظہار خیال کرتے ہوئے قائدایوان سینیٹر شہزاد وسیم نے کہا کہ آج ایک طرف عمران خان اداروں کی معاونت کیساتھ کمر بستہ ہیں،معاشی بدحالی سے ہم معاشی استحکام کی طرف جا رہے ہیں،برآمدات بڑھ رہی ہیں، تجارتی خسارہ منفی سے مثبت ہو چکا ہے۔

انہوں نے کہا کہ گیارہ جماعتوں کی سرکس ہو رہی ہے،سرکس اس لئے کہہ رہا ہوں کہسر کسی کا دھڑ کسی کا ہے،زبان کسی کی ہے بیان کسی کی ہے،لیکن سب ایک ہی شاخ پہ بیٹھے ہیں۔قائد ایوان کی تقریر پر سینیٹر سسی پلیجو نے احتجاج کیا جس پر سینیٹر شہزاد وسیم نے کہا کہ آپ جتنا مرضی شور کریں اس سے کوئی فرق نہیں پڑتا کیونکہ عمران خان جانتا ہے کہ گیارہ کو۔نو دو گیارہ کیسے کرنا ہے اورعمران خان ان کو نو دو گیارہ کر دے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں