مودی سرکار کی پالیسیاں بھارت میں عدم استحکام کا باعث ہیں،عالمی جریدے دی اکانومسٹ نے بھارتی عدم برداشت کا چہرہ بے نقاب کر دیا

اسلام آباد (این این آئی)عالمی جریدے دی اکانومسٹ نے بھارتی عدم برداشت کا چہرہ بے نقاب کرتے ہوئے کہاہے کہ مودی سرکار کی پالیسیاں بھارت میں عدم استحکام کا باعث ہیں ، مودی کی پالیسیاں سیکولر بھارتی آئین کی کھلم کھلا خلاف ورزی ہے،بھارتی آئین اقلیتوں ، زبان ، لسانی اور گروہی تحفظ کا ضامن ہے ۔ عالمی جریدے نے تازہ ایڈیشن میں مودی سرکار پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہاکہ مودی دنیا کی سب سے بڑی جمہوریت کو ناقابل تلافی نقصان پہنچا رہے ہیں ، مودی سرکار کی پالیسیاں بھارت میں عدم استحکام کا باعث ہیں ۔دی اکانومسٹ نے کہاکہ بی جے پی سرکار بھارت کیلئے زہر قاتل ثابت ہورہی ہے ، مودی سرکار اپنے سیاسی مفاد کیلئے مذہبی تفریق اور تقسیم کا پرچار کررہی ہے۔دی اکانومسٹ نے کہاکہ مودی کی پالیسیاں سیکولر بھارتی آئین کی کھلم کھلا خلاف ورزی ہے ، دنیا کی سب سے بڑی جمہوریت مودی سرکار کے ہندوتوا کا پرچار کررہی ہے ۔جریدہ نے کہاکہ بھارتی آئین اقلیتوں ، زبان ، لسانی اور گروہی تحفظ کا ضامن ہے ، مودی آئینی حقوق غصب کرکے آئین کی خلاف ورزی کررہے ہیں ۔ جریدہ نے کہاکہ بی جے پی کی پالیسیاں بھارت میں بڑی خون ریزی کا باعث بن سکتی ہیں ، مودی سرکار اقتصادی مشکلات ، اقلیتوں اور انسانی کے حقوق سے صرف نظر کررہی ہے۔ رپورٹ میں کہاگیاکہ نئے شہریت قانون کے خلاف بڑے پیمانے پر احتجاج حکومت پر عدم اعتماد ہے ،بھارتی شہریوں کی اکثریت مودی سرکار کی نئی پالیسیاں مسترد کرچکی ہے ، ہر طبقے نے سڑکوں پر آکر مودی سرکار کی پالیسیاں مسترد کردی ہیں ، مقبوضہ کشمیر میں جاری لاک ڈاؤن بنیادی حقوق کی خلاف ورزیوں کا منہ بولتا ثبوت ہے ۔عالمی جریدہ نے کہاکہ مقبوضہ کشمیر کے عوام مہینوں سے اپنے بنیادی حقوق سے بھی محروم ہیں ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں