کشمیریوں سے غداری کرنیوالے کو قوم کتوں کے آگے ڈال دے گی،شیخ رشید احمد

دھیر کوٹ وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ کشمیری بڑی عظیم قوم ہے ،کشمیری چیچینیا اور بوسینیا نہیں ہے،کشمیر کے کروڑوں لوگ گائے بکریاں نہیں ہیں، جس نے بھی کشمیریوں سے غداری کی اس کو قوم کتوں کے آگے ڈال دے گی،جب مودی جیسے ہٹلر بے وقوف حکومت میں آ جاتے تواللہ نئے راستے کھول دیتا ہے،مقبوضہ کشمیر اور لال حویلی کا ایک ہی رشتہ ہے،وقت بتائے گا لال حویلی اور لال چوک ایک ہے، آج نا شملہ معاہدہ ہے نہ ایل او سی ہے۔ان خیالات کا اظہار وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے دھیر کوٹ آزاد کشمیر میں ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔تفصیلات کے مطابق ہفتے کے روز وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد دھیر کوٹ آزاد کشمیر میں ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ، نازی، فاشسٹ مودی نے جو غلطی کی ہے اس کے بعد پاکستان نے مقبرضہ کشمیر کو پاکستان کے ساتھ ملانے کا فیصلہ کر لیا ہے ، ہٹلر مودی نے غلطی کی ہے،کشمیر میں20دن سے کرفیو ہے ، کشمیر کو اندر سے جانتا ہوں، میرے خاندان کے لوگوں کی قبریں کشمیر میں ہے، مقبوضہ کشمیر اور لال حویلی کا ایک ہی رشتہ ہے،وقت بتائے گا لال حویلی اور لال چوک ایک ہے،72سال سے ساری قوم آج کے دن کے لئے پیسے اکٹھے کئے ہیں ، آج نا شملہ معاہدہ ہے نہ ایل او سی ہے،11 ماہ تک ہماری فوج نے بھارتی فوج کی آنکھوں میں آنکھ ڈال کر بیٹھی رہی ہے، ساری دنیا ہٹلر مودی کے خلاف ہوتی جا رہی ہے، پاکستان کی سیاست میں سب سے زیادہ کشمیر اور کشمیر کے چپے چپے کو جانتا ہوں، مودی پاکستان میں حملہ نہیں کر سکتا،اگر اب جنگ ہوئی تو یہ آخری جنگ ہوگی ،بلاجی کے مندر میں گھنٹی نہیں بجے گی، بھارت میں اب نہ گھاس اُگے گی نہ چڑیا چہکے گی سرینگر سے جو کال ہوگی وہ میر عتیق اور وزیر اعظم کی بھی کال ہوگی،سرینگر کی گلی گلی کو جانتا ہوں، سرینگر کی آواز پاکستان کی آواز ہوگی، ، 72سال سے آج کے دن کے منتظر تھے کہ سلامتی کونسل کی قرار داد ختم ہو، آج ہندوستان نے مقبوضہ کشمیر میں قبضہ کر لیاہے ، عمران خان کے بیان کو سہراتا ہوں کہ اب بھارت سے بات چیت نہیں ہو سکتی، کشمیری بڑی عظیم قوم ہے ،کشمیری چیچینیا اور بوسینیا نہیں ہے،کشمیر کے کروڑوں لوگ گائے بکریاں نہیں ہیں، جس نے بھی کشمیریوں سے غداری کی اس کو کتوں کے آگے ڈال دے گی،جب مودی جیسے ہٹلر بے وقوف حکومت میں آ جاتے تواللہ نئے راستے کھول دیتا ہے ، جواہر لال نہرو خود کشمیر کو سلامتی کونسل میں لے جانے والاہے ، مودی ہندو فاشسٹ ہے ، اسے غلط فہمی ہے، مودی کشمیر کی بات کرتا ہے ، 24,25کروڑ مسلمان بھارت میں بستے ہیں اور پاکستان کی طرف دیکھتا ہے، اگر جنگ ہوئی توصرف کشمیر میں نہیں بھارت کے ہر مسلمان کے گھر سے نعرہ تکبیر بلند ہوگی،بیک ڈپلومیسی کرنی ہے، میڈیا میں مودی ہٹلر کا چہرہ بے نقاب کرناہے،اوورسیز پاکستانیز بھی کشمیر کیلئے نکلے، کشمیر چٹان کی طرح پاکستان کے ساتھ کھڑا ہے، چین سے ہماری دوستی ہمالیہ سے بلند ہے لیکن اس دوستی کا پاس رکھنا ہے ،ہمیں چین کے ساتھ کھڑا ہوناہے ، دھیر کوٹ کے لوگ تیار ہو جائو،آج وقت آ گیا ہے کہ کشمیر کے ساتھ ہو، آج پاک فوج کے ساتھ قوم کندھے سے کندھا ملا کر کھڑی ہوئی ہے ، نیک اور ایک ہو کر کشمیریوں کے ساتھ کھڑا ہونا ہے ،ہر پاکستان کا فرض ہے کہ وزیر اعظم عمران خان کے ساتھ مل کر کشمیر کی جدوجہد کی آزادی میں ساتھ دے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں