شہبازشریف کی بھارت میں مسلمانوں کے قتل عام، مذہبی مقامات کی بے حرمتی کی شدید مذمت

 اسلام آباد (این این آئی)پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر اور قائد حزب اختلاف شہبازشریف نے بھارت میں مسلمانوں کے قتل عام، مذہبی مقامات کی بے حرمتی کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہاہے کہ مودی نے گجرات کی تاریخ دلی میں دہرائی،حکومت پاکستان معاملہ اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کمشن، اوآئی سی میں اٹھائے ،عالمی برادری بھارت کے اندر مسلمانوں کے قتل عام، اقلیتوں پر جبروتشدد اور مذہبی مقامات کی بے حرمتی کا نوٹس لے ۔ ایک بیان میں انہوںنے کہاکہ امریکہ کو سوچنا ہوگا کہ وہ تباہ کن ہتھیار جنونی کے ہاتھ میں دے رہا ہے جن کے پاگل پن سے خطہ پہلے ہی خطرے سے دوچار ہے ۔ انہوںنے کہاکہ عالمی برادری بھارت کے اندر مسلمانوں کے قتل عام، اقلیتوں پر جبروتشدد اور مذہبی مقامات کی بے حرمتی کا نوٹس لے ۔انہوںنے کہاکہ ہندتوا کا خونی کھیل رکوایاجائے، جرائم میں ملوث عناصر کو گرفتار کرکے سزا دی جائے ، بے گناہ شہریوں کے نقصانات کا ازالہ کیاجائے ۔ انہوںنے کہاکہ اقوام متحدہ، عالمی برادری بنیادی انسانی حقوق اور انسانی جان، مذہبی مقامات کے تحفظ کے عالمی قوانین پر عمل کرائے ۔ انہوںنے کہاکہ امریکی صدرکو اپنے دورے کے دوران مسلمانوںکے قتل عام اور مذہبی مقامات کی بے حرمتی کی مذمت کرنی چاہئے ۔ انہوںنے کہاکہ بھارتی مسلمانوں کے منظم قتل عام سے نازی ہٹلر کے دورکی یاد تازہ ہوگئی ۔انہوںنے کہاکہ مسلمانوں کے قتل عام سے مودی حکومت کا دیگر ممالک کی اقلیتوں سے ہمدردی کا ناٹک پوری طرح بے نقاب ہوگیا۔ انہوںنے کہاکہ جو حکومت اپنے ملک کی اقلیتوں کا تحفظ نہ کرسکے وہ کسی دوسرے ملک کی اقلیتوں کے تحفظ کی بات کس منہ سے کرسکتی ہے؟ ۔ انہوںنے کہاکہ دلی میں ہونے والی یہ خونریزی ارویند کیجروال کی حکومت پر سیاہ دھبہ ہے ۔انہوںنے کہاکہ بھارت کے مسلمانوں اور اقلیتوں سے یک جہتی اور اظہار ہمدردی کرتے ہیں۔ انہوںنے کہاکہ شہید ہونے والے مسلمانوں کے درجات کی بلندی، متاثرہ خاندانوں سے ہمدردی کا اظہارکرتے ہیں ۔ انہوںنے کہاکہ بے گناہ مسلمانوں کی املاک کو پہنچائے گئے نقصانات کا ازالہ کیاجانا چاہئے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں